شریک ہوں اور تازہ ترین معلومات حاصل کریں

فخر عباس

  • غزل


بالکل تم سا اور تمہارا لگتا ہوں (ردیف .. ا)


بالکل تم سا اور تمہارا لگتا ہوں
کبھی کبھی میں خود کو پیارا لگتا ہوں

ایک نظر اس حور نے مجھ کو دیکھا تھا
خود کو میں اب ایک ستارا لگتا ہوں

جتنا آپ جتاتی ہیں ہر میسج میں
کیا میں آپ کو اتنا پیارا لگتا ہوں

شاید میری جیت اسی میں ہوتی ہے
اس کے آگے ہارا ہارا لگتا ہوں

میرا شعر چرا کر تم نے شعر کہا
رشتے میں اب باپ تمہارا لگتا ہوں

ہاتھ پکڑ کر ساتھ کھڑی ہو جاتی ہے
لوگوں میں جب میں بیچارہ لگتا

ویڈیو
This video is playing from YouTube Videos
This video is playing from YouTube فخر عباس

Leave a comment

+