شریک ہوں اور تازہ ترین معلومات حاصل کریں

فاطمہ حسن

  • غزل


قربتوں میں فاصلے کچھ اور ہیں


قربتوں میں فاصلے کچھ اور ہیں
خواہشوں کے زاویے کچھ اور ہیں

سن رہے ہیں کان جو کہتے ہیں سب
لوگ لیکن سوچتے کچھ اور ہیں

رہبری اب شرط منزل کب رہی
آؤ ڈھونڈیں راستے کچھ اور ہیں

یہ تو اک بستی تھکے لوگوں کی ہے
راہ میں جو لٹ گئے کچھ اور ہیں

مل رہے ہیں گرچہ پہلے کی طرح
وہ مگر اب چاہتے کچھ اور ہیں

ویڈیو
This video is playing from YouTube Videos
This video is playing from YouTube فاطمہ حسن

Leave a comment

+