شریک ہوں اور تازہ ترین معلومات حاصل کریں

ناصر شہزاد

  • غزل


نین نشے کی چڑھتی نمو پر


نین نشے کی چڑھتی نمو پر
باقی بدن سب جام و سبو پر

چڑیاں مور ممولے وادی
ہم تم ایک کنار جو پر

لکھی گئی تاریخ ہماری
کوفے تیرے کاخ و کو پر

ہم نے اپنی کویتا گوندھی
مٹی کی سوندھی خوشبو پر

کربل حرب، ہراول، حملہ
کربل آخری ضرب عدو پر


Leave a comment

+